Announcement! SAME DAY DELIVERY FOR ORDERS PLACED BEFORE 3:00 PM ACROSS LAHORE, KARACHI, FAISALABAD AND SIALKOT (OFFER NOT VALID ON SATURDAY & SUNDAYS). >> If you are facing any issue while placing order, Please WhatsApp us on +923091510927 / Call us +923091510927. >> Pay via JazzCash or Bank Transfer on order above 5,999 PKR you will get FREE delivery.

سود

Sood (Interest)

    0 reviews
Product Code
81-8088-019-2
Category
General
Publisher
Publish Date:
January 01, 1970
Availability
In stock
Author
Syed Abul Ala Maududi
Description

*سرمایہ دارانہ نظام نے زندگی کے مختلف شعبوں میں جو بگاڑ پیدا کیا ہے اس کا سب سے بڑا سبب سُود ہے۔ ہماری معاشی زندگی میں سُود کچھ اِس طرح رچ بس گیا ہے کہ لوگ اِس کو معاشی نظام کا ایک لازمی عنصر سمجھنے لگے ہیں اور اِس کے بغیر کسی معاشی سرگرمی کو ناممکن سمجھتے ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ اَب وہ اُمت یعنی اُمت مسلمہ جس کو اللہ تعالٰی نے اپنی کتاب میں سُود مٹانے کیلۓ مامور کیا تھا، جس کو سُود خُوروں سے اعلانِ جنگ کرنے کا حکم دیا تھا، اَب اپنی ہر معاشی سکیم میں سُود کو بنیاد بنا کر، سُود خُوری کے بڑے بڑے ادارے قائم کر رہی ہے اور سُودی نظام کو استحکام بخش رہی ہے۔*  *امام سیّد ابوالاعلیٰ مودودیؒ نے جن کی زندگی کا مشن ہی غیر اِسلامی نظریہ و نظام کو اکھاڑ پھینکنا ہے، اِس موضوع پر قلم اُٹھایا اور اس کے ہر پہلو پر اس تفصیل کے ساتھ ایسی مدلل بحث کی ہے کہ کسی معقول آدمی کواس کی حرمت میں کوئی شبہ تک باقی نہ رہے۔* *زیرِ نظر کتاب سُود میں نہایت مدّلل انداز کے ساتھ سُود کے بارے میں قُرآن و سُنت کی روشنی میں سائینٹیفک انداز میں بحث کی ہے۔ اِسلامی نظامِ معیشت کا سرمایہ دارانہ نظام معیشت اور اشتراکی نظام سے اصولی فرق واضح کرتے ہوۓ یہ ثابت کر دیا ہے کہ اِسلام کا نظامِ معیشت سُود کا نظام ختم کر کے استحصال سے پاک عدل و انصاف اور برابری کی سطح پر نظامِ معیشت کو پروان چڑھاتا ہے جبکہ سرمایہ دارانہ اور اشتراکی نظام سُود کو بنیاد بنا کر دولت کو غیر منصفانہ انداز سے چند ہاتھوں میں سمیٹ کر غیر عادلانہ نظام کو قائم کرتا ہے۔* *سُود سے دُنیا بیزار ہو چکی ہے اور حالت یہ ہے کہ بعض غیر مسلم ممالک بھی بہت سنجیدگی کے ساتھ سُودی معیشت سے چھٹکارا حاصل کرنے کیلۓ سوچ رہے ہیں۔*  *یہ عظیم شاہکار اِسلامی لٹریچر میں ہی نہیں، معاشی لٹریچر میں بھی ایک بیش بہا اضافہ ہے۔ معاشیات سے دلچسپی رکھنے والے حضرات عموماََ کالجوں، یونیورسٹیوں میں معاشیات کے طلباء، کاروباری افراد اور عدالتوں سے تعلق رکھنے والے حضرات خصوصاََ اس کا مطالعہ کریں گے۔ یہ کتاب سُودی نظام کے چکر سے نکلنے کیلۓ حد درجہ مفید و معاون ثابت ہوگی     

Rs. 320/-   PAK  

Book Specification

Genre: General
Pages: 304
Size: 17x24
Weight (KG): 1.046
Color: 1 color

Featured Books